29

حارث کا رویہ غیر پیشہ ورانہ ہے‘، سابق کپتان سلمان بٹ فاسٹ بولر پر برس پڑے

ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ میں امریکا سے شکست پر بات کرتے ہوئے سابق کپتان سلمان بٹ قومی ٹیم بالخصوص فاسٹ بولر حارث رؤف پر برس پڑے ۔

ایک انٹرویو کے دوران سلمان بٹ نے پاک امریکا میچ پر تبصرہ کرتے ہوئے حارث رؤف کے آخری اوور پر بھی بات کی اور کہا کہ ہمارے لیے آخری اوور میں بولر کی پٹائی ہونا کوئی بڑی بات نہیں ۔

سلمان بٹ نے حارث رؤف پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ یہ بچہ ہے جو اپنی فیلڈ دیکھے بغیر گیند کرواتا ہے، آخری اوور میں حارث کا مڈ آف سر کل کے اندر ہے، اس کے باوجود حارث نے آخری بال فل بال کروائی اور چوکا لگ گیا اس کے بعد سب نے دیکھا کہ کپتان حارث پر چیخے بھی کہ میں آگے کھڑا ہوا ہوں۔

سلمان بٹ نے حارث رؤف کو واضح کرتے ہوئے کہا کہ آپ کو پتا ہونا چاہیے جب آپ مڈ آف اوپر لیتے ہیں تو آپ فل بال نہیں کھیلتے، یہ کرکٹ کی بنیادی باتیں ہیں لیکن حارث کا اسٹائل ہے گیند پر رنز کھانے کے بعد وہ بیٹھ جاتا ہے سر پر ہاتھ رکھ لیتا ہے جیسے اس کے شیئرز کا نقصان ہوگیا ہو یا کوئی چیز چوری ہوگئی ہو، مجھے سمجھ نہیں آتا وہ یہ سب کرکے کیا ظاہر کرنا چاہتا ہے، یہ غیر پیشہ ورانہ ہے، ایسا لگتا ہے کہ جیسے آپ کچھ سیکھنا نہیں چاہتے۔
سابق کرکٹر کا کہنا تھاکہ ٹیم کے لوگ اب پریس کانفرنس میں آکر پھر وہی دو چار یاد کی ہوئی باتیں کہیں گے کہ میچ کی شکست کی وجہ intentکی کمی تھی، اسٹرائیک ریٹ اچھا نہیں تھا، پھر کہیں گے ہم سیکھ رہے ہیں سیکھنے کا عمل ہے لیکن کچھ بھی کہیں سچ یہ ہے کہ ان کے پاس کامن سینس کی کمی ہے، گیم سے آگہی کی کمی ہے، ان کے پاس وہ اسپیڈ اسمارٹنیس نہیں جو ایک کرکٹر کو اتنے تجربے کے بعد آنی چاہیے۔

سلمان بٹ نے مزید کہا کہ امریکا کی ٹیم نئی ٹیم ہے آپ نے اس ٹیم کو ایک باؤنسر نہیں مارا، اتنی بڑی باؤنڈری پر بھی آپ نے اس ٹیم کو باؤنسر نہیں مارا؟ آپ نے انہیں محسوس ہی نہیں کروایا کہ آپ ان پر اٹیک کرنے جارہے ہیں، فیلڈنگ آپ نے کسی عام میچ کی طرح سیٹ کی ہوئی تھی جس کی وجہ سے کیچ چھوٹ گئے، ایک کیچ افتخار کے پاس سے گزرا دوسرا کیچ آگے گرگیا کیوں کہ فیلڈر وہاں کیپر سے بھی پیچھے کھڑا تھا۔ سمجھ نہیں آرہا کہ ہمیں ٹیم کی کس کس بات پر تنقید کرنی چاہیے، کیوں کہ یہ میچ غلطیوں سے بھرا ہوا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں