26

وطن پر قربان مسیحی سپاہی کی آخری رسومات، وزیراعظم اور آرمی چیف کی شرکت

راولپنڈی: کرم میں انسداد دہشت گردی آپریشن کے دوران وطن پر قربان ہونے والے سپاہی کی آخری رسومات ادا کردی گئیں۔ تقریب میں وزیراعظم اور آرمی چیف نے بھی شرکت کی۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق اسلام آباد کے رہائشی 29 سالہ سپاہی ہارون ولیم کی آخری رسومات سینٹ پال چرچ راولپنڈی میں اداکی گئیں۔ مسیحی سپاہی ہارون ولیم نے گزشتہ روز ضلع کرم میں انسداد دہشت گردی آپریشنز میں ڈیوٹی کے دوران مادر وطن کے دفاع میں لازوال قربانی دی۔

آخری رسومات کی تقریب میں وزیر اعظم پاکستان، وزیر دفاع، وزیر داخلہ، وزیر اطلاعات و نشریات، چیف آف آرمی اسٹاف، اعلیٰ سول و فوجی افسران، فوجیوں، شہریوں اور لواحقین نے شرکت کی۔ وزیراعظم نے ملک کی ترقی میں ان کے کردار کو سراہتے ہوئے مسیحی برادری کی خدمات اور قربانیوں کو سراہا۔
وزیراعظم نے اس موقع پر کہا کہ پاکستان کی مسلح افواج ایک مربوط یونٹ ہے، جس میں مختلف مکاتب فکر کے افراد شامل ہیں، جو ریاست کے اجتماعی دفاع کے لیے کوشاں ہیں۔

آرمی چیف جنرل سید عاصم منیرنے سپاہی ہارون ولیم، سپاہی انوش رفون اور ان کے ساتھیوں کی قربانیوں کو خراج عقیدت پیش کیا۔ انہوں نے کہا کہ ان کا اتحاد اور بہادری قوم کی طاقت کی مثال ہے۔ قوم مادر وطن کی دفاع کے لیے ان کی خدمات اور قربانیوں کی ہمیشہ مقروض رہے گی۔

بعد ازاں سپاہی ہارون ولیم کو پورے فوجی اعزاز کے ساتھ راولپنڈی میں سپرد خاک کر دیا گیا۔ حوالدار عقیل احمد (اوکاڑہ)، لانس نائیک محمد طفیر (پونچھ)، سپاہی انوش رفون (اٹک) اور سپاہی محمد اعظم خان (ہری پور) کی نماز جنازہ بھی پورے فوجی اعزاز کے ساتھ ان کے آبائی علاقوں میں ادا کی گئی۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ پاکستان کی مسلح افواج مادر وطن سے دہشت گردی کے خاتمے کے لیے پرعزم ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں