124

نگران وزیر اعظم سے آئی ایم ایف منیجنگ ڈائریکٹر کی ملاقات

نیویارک (مانیٹرنگ ڈیسک) نگران وزیر اعظم سے سائیڈ لائن پر آئی ایم ایف کی منیجنگ ڈائریکٹر نے ملاقات کی ہے،دونوں رہنمائوں کے درمیان پاکستان میں اقتصادی استحکام اور ترقی کو فروغ دینے کے لیے اپنے باہمی عزم کو بڑھانے پر زور دیاگیا۔اس موقع پر دونوں رہنمائوں نے ایک دوسرے سے پرجوش مصافحہ کیا ۔دونوں رہنمائوں نے معاشی چیلنجز سے نمٹنے کیلئے تعاون بڑھانے پر اتفاق کیا ہے۔

قبل ازیں نگران وزیراعظم انوارالحق کاکڑ نے کہا ترقی پذیرملکوں کوعالمی وباؤں کے منفی اثرات سے بچانے کے لئے مالی وسائل مہیا کرنا ہوں گے۔نگران وزیراعظم انوارالحق کاکڑ نے وبائی امراض کی روک تھام، تیاری اور ردعمل کے موضوع پر سمٹ سے خطاب کرتے ہوئے کہا ایک چھوٹے سے وائرس کے باعث کروڑوں لوگوں کو لاک ڈاؤن کا سامنا کرنا پڑا، خوش قسمتی تھی کہ سائنسدان کرونا ویکسین بنانے میں کامیاب ہوگئے۔

نگران وزیراعظم نے کہا ویکسین کی تقسیم میں عالمی سطح پرغیرمنصفانہ رویہ دیکھنے کو ملا، وبائی امراض کی روک تھام کے لئے ویکسینز کی دستیابی ہر ایک کے لئے ممکن بنانا ضروری ہے، کرونا وائرس کی روک تھام میں درپیش آنے والے مسائل کو دوبارہ نہ دہرانے کے لئے اقدامات کی ضرورت ہے، ہمیں عالمی سطح پرویکسین کی ترسیل کے نظام کو بہتر بنانا ہوگا۔

انوار الحق کاکڑ نے کہا عالمی حدت میں پاکستان کا حصہ بہت کم ہے، عالمی حدت میں سب سے زیادہ متاثر ہونے والے ممالک میں پاکستان شامل ہے، حقوق دانش کے نام پرغریب ملکوں کے ساتھ غیرمنصفانہ رویہ نہیں رکھنا چاہئے، گلوبل وارمنگ کے خلاف ہرایک کواپنا کردارادا کرنا چاہئے۔

بعد ازاںاقوام متحدہ کےصدردفترمیں ماحولیاتی تبدیلیوں کےحوالےسے اجلاس لیڈرزڈائیلاگ میں اظہار خیال کرتے ہوئے نگران وزیراعظم انوار الحق کا کہنا تھا کہ ماحولیاتی تبدیلی کے چیلنجز سے نمٹنا پاکستان کی ترجیحات میں شامل ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان نےدریائےسندھ کےحوالےسے منصوبےکا آغازکیا،ارلی وارننگ نظام سےمتعلق بھی منصوبہ بندی کی،2030تک پاکستان 60 فیصد متبادل توانائی کےذرائع استعمال کرے گا۔انوار الحق کاکڑ کا کہنا تھا کہ عالمی حدت روکنےکے لیےعالمی کوششوں کاحصہ ہیں، گلوبل وارمنگ کےخلاف ہر ایک کو اپنا کردار ادا کرناچاہیے۔

قبل ازیں نگران وزیر اعظم انوار الحق کاکڑ نے امید ظاہر کی ہے کہ رواں سال ملک کے ہر علاقے میں پولیو وائرس کی منتقلی کو روکنا ممکن ہوگا،حکومت اور نیشنل پولیو ٹاسک فورس ملک بھر میں بچوں کو پولیو ویکسین، معمول کے حفاظتی ٹیکوں اور دیگر ضروری صحت کی خدمات پہنچانے کے لیے پوری طرح پرعزم ہیں۔

بدھ کو وزیراعظم آفس کے میڈیا ونگ سے جاری بیان کے مطابق نگران وزیراعظم انوارالحق کاکڑ نے بل اینڈ میلنڈا گیٹس فانڈیشن کے شریک چیئرمین بل گیٹس سے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 78 ویں اجلاس کے موقع پر ملاقات کی جس میں پولیو کے خاتمے، صنفی مساوات، غذائیت اور مالیاتی شمولیت پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ وزیراعظم نے اس امید کا اظہار کیا کہ رواں سال ملک کے ہر علاقے میں پولیو وائرس کی منتقلی کو روکنا ممکن ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں